خا نہ کعبہ دن رات کیو ں کھلا رہتا ہے ؟

مکہ معظمہ میں حرم کعبہ کے اندر پا کستان کے بڑے بڑے علما ء ایک جگہ تشریف فر ما تے تھے کہ اچا نک ایک عر بی سا منے آئے۔ اے علما ئے پا کستان کیاآپ جا نتے ہیں کہ خا نہ کعبہ رات دن کیو ں کھلا رہتا ہے

جب کہ مسجد نبو یﷺرات کے وقت بند رہتی ہے ایسا کیو ں ہے اور مجھے جواب صر ف اور صر ف قرآن مجید کے حوالے سے دینا ہے۔ پاکستان کے ان علما ء میں حضر ت مو لا نا مفتی محمود مرحوم و مغفو ر بھی تشریف فر ما تھے

حضر ت مفتی محمود رحمہ اللہ نے فو ر اً ’’ آیت الکر سی ‘‘ پڑھنا شروع کر دی اور فر مایا کہ اللہ کے سوا ئی کو ئی معبو د نہیں و ہ زندہ ہے ہ زندہ ہے کا ئنا ت کو تھا منے والا ہے ، نہ اسے اونگھ آتی ہے اور نہ نیند آتی ہے اس لیے اللہ کا گھر دن رات کھلا رہتا ہے

اور مسجد نبو یﷺ میں آنحضرت ﷺکا رو ضہ اطہر ہے۔جس میں افضل البشر آرام فر ما ہیں ، تو چو نکہ نیند انسا ن کے ساتھ لا زم و ملزوم ہے انسا ن کو آرام کی ضرورت ہوتی ہے اس لیے رات کے وقت مسجد نبو یﷺ بند رہتی ہے جب کہ اللہ رب العا لمین آرام سے پا ک اور مستثنیٰ ہیں اس لیے خا نہ کعبہ جو اللہ پا ک کی تجلیا ت کا مر کز ہے و ہ دن رات کھلا رہتا ہے۔

نوٹ :۔یہ ایک تاریخی اور پرانا واقعہ ہے جسے سب ایڈیٹر نے شیئر کیا ہے ۔ پچھلے دس سال سے مسجد نبویﷺمیں باب السلام اور باب البقیع جہاں ریاض الجنہ اور روضہ شریف ہیں وہ چوبیس گھنٹے کھلے رہتے ہیں رات کو مسجد کے باقی حصے صفائی کی غرض سے بند کر دیئے جاتے ہیں

کاموں کو ان کی ذات اور اقسام میں تقسیم کرلیں۔ کچھ لوگوں سے صبح سویرے Creative کام ہوتے ہیں، کسی کو استھما اور تیزابیت کی شکایت ہے تو Boot ہونے میں کچھ وقت لگتا ہے۔ وہ اخبار پڑھنے، ای میل چیک کرنے اور تمام وہ کام جن میں زیادہ دماغ نہ لگے، صبح کر لیتے ہیں اور دوپہر یا شام Creative کاموں کےلیے رکھ چھوڑتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *